محکمہ بلدیات،سندھ نے مختلف بلدیاتی اداروں میں موجود ہوائی افسران وملازمین کو نوکریوں کے شواہد نہ ملنے پر گھر بھیج دیا گیا

محکمہ بلدیات،سندھ نے مختلف بلدیاتی اداروں میں موجود ہوائی افسران وملازمین کو نوکریوں کے شواہد نہ ملنے پر گھر بھیج دیا گیا

کراچی) رپورٹ: فرقان فاروقی)سندھ لوکل گورئمنٹ بورڈ کے سیکریٹری ضمیر احمد عباسی کی کاوشوں سے سندھ کے مختلف بلدیاتی اداروں میں موجود ہوائی افسران وملازمین کو نوکریوں کے شواہد نہ ملنے پر گھر بھیج دیا گیا یاد رہے کہ سندھ کے بلدیاتی اداروں میں تعیناتی کے مزے لوٹنے والے ایسے افسران اور ملازمین جن کے بارے میں شکایات تھیں کہ وہ سروس ریکارڈ کے بغیر سندھ کے بلدیاتی اداروں میں اپنے فرائض سر انجام دے رہے ہیں سیکریٹری لوکل گورئمنٹ بورڈ ضمیر احمد عباسی

نے ایسے تمام ملازمین کو ایک نوٹیفیکیشن کے ذریعے متنبہ کیا تھا کہ وہ اپنے سروس ریکارڈ سمیت حاضر ہوں لیکن ان میں سے 122 ملازمین سندھ لوکل گورئمنٹ بورڈ میں حاضر نہ ہوسکے یا سروس ریکارڈ فراہم کرنے میں ناکام رہے جس پر انہیں جعلی بھرتی قرار دیکر فوری طور پر نوکریوں سے برخاست کر دیا گیا ہے اس طرح سندھ کے بلدیاتی اداروں سے گھوسٹ ورکرز کے خاتمے کیلئے سندھ لوکل گورئمنٹ بورڈ کے اقدامات کو سراہا جارہا ہے اور اس امید کا اظہار کیا جارہا ہے کہ کراچی سمیت سندھ کے بلدیاتی اداروں میں بعض کونسل سروس افسران وملازمین اہم پوسٹوں پر تعینات کر دئیے گئے ہیں جو کہ سیکریٹری سندھ لوکل گورئمنٹ بورڈ سمیت اہم شخصیات کا نام استعمال کر کے انہیں بدنام کرنے کے ساتھ مال بٹورنے میں شہرت پا چکے ہیں ان کیخلاف بھی کارروائی عمل میں لائ جائے گی سیکریٹری سندھ لوکل گورئمنٹ بورڈ ضمیر احمد عباسی کا کہنا ہے کہ بلا امتیاز سندھ کے بلدیاتی اداروں میں بہتری لانے کیلئے ایسے افسران وملازمین کی تعیناتیوں اور تقرریوں کو یقینی بنایا جارہا ہے جو اہلیت کے اعتبار سے فرائض سر انجام دینے میں مہارت رکھتے ہوں ایسے ملازمین جو کسی نہ کسی طرح بلدیاتی اداروں میں تعیناتیاں حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں جبکہ وہ جعلی ہیں ان سے دستاویزات طلب کی جارہی ہیں جو دستاویزات فراہم کرنے میں کامیاب ہو جاتے ہیں انہیں کسی قسم کی پریشانی کا سامنا نہیں کرنا پڑتا البتہ جو دستاویزات فراہم نہیں کر پاتے ان کی پوسٹنگ منسوخ کر کے کاروائی کی جاتی ہے جبکہ جو افسران وملازمین کسی کا بھی نام لے کر افسران وملازمین پر دھونس جما رہے ہیں ان کی اطلاع دی جائے ان کے خلاف بلا تعطل کاروائی عمل میں لائیں گے.

Whats-App-Image-2020-08-12-at-19-14-00-1-1
upload pictures to the internet

اپنا تبصرہ بھیجیں